پاکستان پراپرٹیپراپرٹی گائیڈپراپرٹی نیوزسی پیک

ایف بی آر نے گوادر میں کام کرنے والے کاروباری اداروں کے ٹیکس معاملات میں اہم فیصلہ

اسلام آباد: ایف بی آر (فیڈرل بورڈ آف ریونیو) نے  سیلز ٹیکس میں 23 سال کی چھوٹ دینے پر اتفاق کیا ہے۔ اسی کے ساتھ ہی بورڈ نے چین اوورسیز پورٹ ہولڈنگ کمپنی (سی او پی ایچ سی) کی جانب سے اپنی کاروائیوں کے لئے گاڑیوں کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹی اور دیگر ٹیکسوں کے ساتھ ساتھ اس کے تحت کام کرنے والی کمپونیوں کے لئے 40 سال کی چھوٹ مانگنے کی تجویز کو مسترد کردیا ہے۔

اس اعلان کے نتیجے میں ، سی او پی ایچ سی اور اس کی ذیلی تنظیمیں گوادر پورٹ اور گوادر فری زون کیلئے بغیر کسی کسٹم ڈیوٹی اور دوسرے ٹیکس کی ادائیگی کے پہلے پیش کردہ میعاد 40 کی بجائے 23 سال تک درآمد کرسکیں گی۔ ایف بی آر نے گوادر پورٹ اور گوادر فری زون کے توسط سے حاصل کی جانے والی COPHC اور اس کی ذیلی تنظیموں کی آمدنی پر سیلز ٹیکس میں بھی چھوٹ دے دی ہے۔

ایف بی آر نے ایک لاکھ ‘امیر’ ٹیکس نان فائلرز کو نوٹسز جاری کردیے

اس مقصد کے لئے ٹیکس اتھارٹی نے حال ہی میں وزارت سمندری امور کو ایک سمری بھیجی تھی جس میں اس نے گوادر فری زون سے چلنے والے کاروبار پر لاگو ڈیوٹیز اور ٹیکسیز پر ریلیف مانگا تھا۔ توقع ہے کہ سمری میں جن تجاویز کا تذکرہ کیا گیا ہے اس کے بعد وفاقی کابینہ اور اقتصادی رابطہ کمیٹی نے ٓمنظوری دی تو ٹیکس قوانین کا حصہ بن جائیں گے۔

ہمارا Youtube Channel سبسکرائب کریں

مزید خبروں کیلئے ہمارا Facebook Page وزٹ کریں

Tell to Others
0Shares
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker