اہم ترینبین الاقوامی پراپرٹی

لاک ڈاؤن کے باوجود لندن کی پراپرٹی کی قیمتیں پہلی بار ریکارڈ 245000 پونڈز تک پہنچ گئی

لندن:  انڈیکس کے مطابق برطانیہ میں پراپرٹی کی اوسط قیمت اگست میں پہلی بار ریکارڈ 245000 پونڈز تک پہنچ گئی۔ ہیلی فیکس کا کہنا ہے کہ برطانیہ میں پراپرٹی کی اوسط قیمت اگست میں 245747 پونڈز تھی جو کہ ایک سال قبل اسی مہینے کی قیمت سے 5.2 فیصد زائد ہے۔ ماہ بہ ماہ کی بنیاد پر پراپرٹی کی قیمت میں 1.6 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ تاہم ایسے وقت جب گھرانوں کی آمدنی کو دباؤ کا سامنا ہے اور جابس کٹوتیوں کے اعلانات کئے گئے ہیں ، یہ امر ’’ انتہائی مشکل ‘‘ ہے کہ مکانات کی موجودہ قیمتیں مستحکم رہیں۔ اس کا کہنا ہے کہ درمیانی مدت کے لئے مکانات کی قیمتوں میں کمی کا دباؤ ہوگا۔

ہیلی فیکس کے موجودہ منیجنگ ڈائریکٹر رسل ہیلی نے کہا ہے کہ سالانہ بڑھوتری اب 5.2 فیصد ہے جو کہ 2016 کے بعد سے مستحکم ترین سطح ہے جبکہ پراپرٹی کی اوسط قیمت پہلی بار ریکارڈ 245000 پونڈز پر پہنچی ہے۔ مارکیٹ کی سرگرمیوں میں تیزی کا محرک لاک ڈاؤن کے بعد موسم گرما کا دورانیہ ہے جس میں ڈیمانڈ بڑھنے کے باعث اضافہ ہوا ہے، بعض خریداروں کی مضبوط خواہش ہے کہ بڑی پراپرٹیز میں منتقل ہو جائیں اور یقینی طور پر سٹامپ ڈیوٹی میں عارضی کٹوتی بھی ایک سبب ہے۔ برطانیہ میں میکرو اکنامک تصویر اگلے چند ماہ میں واضح ہو جانی چاہئے کیونکہ مختلف حکومتوں کے سپورٹ اقدامات اب اختتام کے قریب ہیں اور لیبر مارکیٹ پر وبا کے اثرات کی حقیقی وسعت ظاہر ہورہی ہے۔

رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے مورگیج آن لائن ’’ مورگیج بروکر ٹسل‘ سربراہ مائلز رابنسن نے کہا ہے کہ ہم تیزی کے ساتھ حکومت کی فرلاف سکیم کے خاتمے کی جانب بڑھ رہے ہیں، اور اس عرصہ کے دوران ایمپلائمنٹ مارکیٹ بہت سوں کے لئے ایک بڑا چیلنج ہوگی۔

Tell to Others
0Shares
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker