اہم ترینبلدیاتی خبریں

کراچی میں تزئین وآرائش کے نام پر شہر بھر میں قائم چورنگیوں کی فروختگی

کراچی: بلدیہ عظمیٰ کراچی نے تزئین وآرائش کے نام پر شہر بھر میں قائم چورنگیوں کو فروخت کرنے کی منصوبہ بندی کرلی۔

بلدیہ عظمیٰ کراچی نے اپنے حدود میں تمام چھوٹی بڑی چورنگیوں کو تزئین و آرائش کے نام پر نجی کمپنیوں اور اداروں کو فروخت کرنے کا منصوبہ بنالیاہے۔ اس سلسلے میں ایڈمنسٹریٹر کراچی نے مختلف کمپنیوں سے خفیہ معاہدہ کیا ہے۔

ذرا ئع کا کہنا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کر اچی کی حدود میں آنے والی چھوٹی بڑی چورنگیو ں کو تزئین وآرائش کے نام پر مبینہ طور فر وخت کیا جائے گا، مختلف نجی کمپنیاں اور ادارے چورنگیوں پر اپنے اشتہارات آوایزاں کریں گے، چورنگیو ں پر رنگ روغن بھی کیا جائے گا اس کے عوض مبینہ طور پر بھاری رشوت دی گئی ہے۔

سپریم کورٹ کی جانب سے کراچی میں اشتہاری بورڈ ، سائن بورڈ ، اسٹیمرز ، اور دیگر اشتہارات لگانے پر پابندی عائد ہے جس کا یہ توڑ نکالا گیا ہے، ذرا ئع نے بتایا منصوبے کے تحت پہلے مرحلے میں چورنگیو ں کو مختلف کمپنیو ں کو دیاگیا ہے اور تاثر یہ دیاجا رہا ہے کہ چورنگیوں کو خوبصورت بنایا جائے گا اور ان کی تزئین وآرائش کی جائے گی اس کالے دھندے جس میں بلدیہ عظمیٰ کر اچی کے افسران مبینہ طور ملوث بتائے جاتے ہیں۔

چورنگیوں کے بعد شہر کے تمام فلا ئی اوورز اور پل بھی اشتہاری کمپنیوں کو دیے جائیں گے اس کے بعد بلدیہ عظمی کراچی دیگر مقامات کو مبینہ طور پر فروخت کرے گا۔ باوثوق ذرائع نے بتایا ہے کہ کے ایم سی کی تمام چھوٹی بڑی چورنگیاں فروخت کرنے میں محکمہ لینڈ کا ایک افسر ملوث ہے جس نے یہ ڈیل کرائی ہے۔

ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ ان تمام منصوبوں کا مقصد مالی بحران سے دوچار بلدیہ عظمیٰ کراچی کی آمدن بڑھانا نہیں بلکہ کروڑوں روپے کی مبینہ کرپشن ہے اس حوالے سے کے ایم سی کے ایڈ منسٹریٹر لئیق احمد کو موقف معلوم کر نے کے لیے فو ن کیا گیا تو انھو ں نے فون سننے سے گریز کیا ۔

Tell to Others
0Shares
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker