اہم ترینپاکستان پراپرٹی

کلفٹن میں کے پی ٹی کی قیمتی اراضی پر شجرکاری مہم کے نام پر قبضہ

کراچی :کلفٹن میں شجرکاری مہم کے نام پر قیمتی اراضی پر قبضہ کیخلاف کے پی ٹی کی درخواست پر سندھ حکومت کو توہین عدالت کا نوٹس جاری ہو گیا۔

درخواست میں چیف سیکریٹری ، بورڈ آف ریونیو، آئی جی سندھ اور کمشنر کراچی کو فریق بنایا گیا ہے۔کے پی ٹی نے عدالت میں آئینی پٹیشن دائر کی تھی کے کلفٹن میں شجرکاری مہم کے نام پر کے پی ٹی کی قیمتی اراضی پر قبضہ کیا جا رہا ہے۔

پٹیشن میں چیف سیکریٹری، آئی جی سندھ،بورڈ آف ریونیو،اور کمشنر کراچی کو فریق بنایا گیا ہے۔پٹیشن میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ مزکورہ اراضی کا نوٹیفکیشن 1875 ، 1940اور 1991 ہوا تھا۔تاہم کے ایم سی نے مالی مشکلات سے نکلنے کے لیے مزکورہ اراضی پر ایک رہائشی منصوبے کے حوالے سے سندھ حکومت سے درخواست کی تھی۔

2014 میں ایک سمری سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو کے ذریعہ وزیر اعلیٰ سندھ کو بھیجی گئی تھی، اس کے خلاف سپریم کورٹ آف پاکستان میں 2014 میں کیس کیا گیا تھا ، سپریم کورٹ کے 16 دسمبر 2014 کے احکامات کے بعد ایک نوٹس بھی 29 جنوری 2015 کو کے پی ٹی کی جانب سے دیا گیا تھا۔

کے پی ٹی کے موقف میں کہا گیا ہے کہ سندھ حکومت کے ذریعہ پرایویٹ لوگ کلفٹن کی مزکورہ 350ایکڑ ارضی پرقبضہ کر رہے ہیں جبکہ سندھ حکومت کو کے پی ٹی کے موقف کی حمایت کرنا چاہیے مگر اس کے برعکس اس اراضی پر ایک پرایویٹ لوگ سندھ حکومت کی حمایت سے شجر کاری مہم میں درخت لگا رہے ہیں۔

Tell to Others
0Shares
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker