اہم ترینترقیاتی منصوبےسی پیک

کے سی آر کو سی پیک میں بھی شامل کیا جائے گا – چین کی یقین دہانی

چینی حکام نے یقین دہانی کروائی ہے کہ سی پیک سے متعلقہ منصوبوں میں کے سی آر کو بھی شامل کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق چینی حکام نے سندھ حکومت کو یقین دلایا ہے کہ وہ کراچی سرکلر ریلوے ، کیٹی بندر اور دیگر منصوبوں پر عملدرآمد کریں گے تاکہ انہیں سی پیک سے متعلقہ منصوبوں میں باضابطہ طور پر شامل کیا جاسکے ،

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور پاکستان میں چینی سفیر نونگ رونگ کی سربراہی میں وزیراعلیٰ ہاؤس میں چینی و حکومتی وفد کے مابین ایک اہم ملاقات ہوئی، وفد کے دیگر ارکان میں چینی قونصل جنرل لی بجیان ، ڈیفنس اتاشی میجر جنرل چن وین رونگ ، قونصلر باؤ ژونگ ، ڈپٹی ڈیفنس اتاشی سینئر کرنل جی ژنکی ، ڈیفنس آفس ، ڈی اے کے معاون خصوصی ، لیفٹیننٹ کرنل دی ویچاؤ ، فرسٹ سکریٹری پولیٹکل وانگ ژیانگ فینگ اور تھرڈسکریٹری کمرشل وو لِنگلن شامل تھے جبکہ وزیراعلیٰ سندھ کی معاونت وزیر بلدیات ناصر شاہ ، چیف سیکرٹری ممتاز شاہ ، چیئرمین پی اینڈ ڈی محمد وسیم ، وزیراعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو ، کمشنر کراچی نوید شیخ ، سیکرٹری خزانہ حسن نقوی ، سیکرٹری ورکس عمران عطا سومرو ، سیکرٹری ٹرانسپورٹ شارق احمد نے کی۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ نے وفد کو بتایا کہ انکی حکومت کی درخواست پر کراچی سرکلر ریلوے (کے سی آر) کو 3 دسمبر 2016 کو سی پیک میں شامل کیا گیا تھا جس کی منظوری دے دی گئی اور اسے چھٹی جوائنٹ کوآرڈینیشن کمیٹی (جے سی سی) میں شامل کیا گیا، اکتوبر 2017 میں ایکنک نے 1.97 ارب ڈالر کی لاگت سے اس منصوبے کی منظوری دی تھی، کے سی آر منصوبہ تمام جے سی سی کا حصہ رہا ہے اور تمام اجلاسوں میں یہ ایک قابل عمل اور قابل تعمیل منصوبہ بتایا گیا لیکن ایسی بڑی رکاوٹیں تھیں جن کو ختم کرنے کی ضرورت ہے، وہ وفاقی حکومت سے معاملات حل کرنے کی درخواست کر رہے ہیں لیکن معاملات بدستور عدم توجہ کا شکار ہیں

Tell to Others
0Shares
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker