اہم ترینبلدیاتی خبریں

کراچی کے انڈرپاسز، فلائی اوورز، پیڈسٹرین برجز اور بڑی شاہراہوں کی بیوٹیفکیشن کے لئے ماسٹر پلان تیار

ایڈمنسٹریٹر کراچی لئیق احمد نے کہا ہے کہ کراچی کے مختلف علاقوں، انڈرپاسز، فلائی اوورز، بالائی گزرگاہوں (پیڈسٹرین برجز) اور بڑی شاہراہوں کی بیوٹیفکیشن کے لئے ماسٹر پلان تیار کرلیا گیا ہے، مختلف کمپنیز اور اداروں کے تعاون و اشتراک سے شہر کی بیوٹیفکیشن کا عمل شروع کیا جائے گا،نجی شعبے کی شمولیت سے کراچی کی سافٹ برانڈنگ میں دنیا میں رائج جدید تکنیک اور آئیڈیاز سے استفادہ کیا جائے گا

یہ بات انہوں نے پیر کے روز کراچی کی بیوٹیفکیشن کے حوالے سے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر سینئر ڈائریکٹر کوآرڈینیشن خالد خان، ڈائریکٹر جنرل ٹیکنیکل سروسز شبیہہ الحسنین زیدی، ڈائریکٹر جنرل پارکس اینڈ ہارٹیکلچر طٰحہ سلیم، فیض قدوائی، سہیل احمد اور مختلف اداروں سے وابستہ افراد بھی اس موقع پر موجود تھے

ایڈمنسٹریٹر کراچی نے کہا کہ کراچی کے انڈرپاسز میں سیوریج سسٹم کو بہتر کرنا ضروری ہے کیونکہ اگر انڈرپاسز میں سیوریج اوربرساتی پانی کی نکاسی کا نظام ٹھیک نہ ہوا تو اس کی بیوٹیفکیشن کی کوئی اہمیت نہیں، ان اداروں سے بھی تعاون حاصل کریں گے جو تخلیقی ذہن کے ساتھ کراچی کی بیوٹیفیکیشن میں شمولیت کے لیے تیار ہوں، انہوں نے کہا کہ کمرشل پہلو کی اہمیت اپنی جگہ ہے لیکن کراچی کے امیج کو بہتر کرنا اور اس کے تہذیبی اور ثقافتی پس منظر میں اس کی اہمیت کو اجاگر کرنا ضروری ہے، کراچی اپنی تہذیب و ثقافت کے اعتبار سے ایک بہترین ماضی کا حامل ہے، دنیا کے چند بڑے شہروں میں شامل اور ساحلی شہر ہونے کے ناطے اس شہر کی اہمیت بہت زیادہ ہے لہٰذا ہر شہری کو کراچی کی بیوٹیفکیشن اور بہتری کے عمل میں اپنا کرار ادا کرنا چاہئے

انہوں نے کہا کہ شارع فیصل کی بیوٹیفکیشن کے لئے بہت جلد کاموں کا آغاز کیا جائے گا اور اسے ایک نئی شکل دی جائے گی،اجلاس کے دوران مختلف علاقوں میں انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کے کاموں کا بھی جائزہ لیا گیا اور فیصلہ کیا گیا کہ بیوٹیفکیشن کے ساتھ انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ بھی جاری رہے گی کیونکہ شہریوں کو سہولیا ت کی فراہمی کے لئے سڑکوں، شاہراہوں، پلوں اور انڈرپاسز کو بہتر حالت میں رکھنا ضروری ہے،

ایڈمنسٹریٹر کراچی لئیق احمد نے کہا کہ شہر کی بیوٹیفکیشن کے لئے بنائے گئے ماسٹر پلان میں مختلف علاقوں کی ضروریات کو بھی پیش نظر رکھا گیا ہے، موجودہ دور کے تقاضوں کے مطابق تمام امور انجام دیئے جائیں گے جس میں الیکٹرونک اور ڈیجیٹل آلات کا استعمال شامل ہے، انہوں نے کہا کہ مختلف سڑکوں پر اسٹریٹ لائٹس کو بھی فعال بنایا جا رہا ہے تاکہ رات کے اوقات میں سڑکیں اور شاہراہیں روشن رہیں، بیوٹیفکیشن کے مقاصد تبھی حاصل ہوں گے جب دستیاب انفراسٹرکچر کو کارآمد حالت میں رکھا جائے جس کے لئے محکمہ ورکس کی فیلڈ ٹیمیں کام کر رہی ہیں، انہوں نے کہا کہ کراچی کو خوبصورت اور سرسبز بنانے کے لئے شروع کی گئی شجرکاری مہم کے نتائج بھی جلد سامنے آنا شروع ہوجائیں گے اور مختلف کوریڈورز کا منظر تبدیل ہوجائے گا، یہ تمام اقدامات شہر کے وسیع تر مفاد میں کئے جا رہے ہیں جن کے مستقبل میں بہترین نتائج برآمد ہوں گے اور کراچی کے شہری ایک خوشگوار تبدیلی محسوس کریں گے۔

Tell to Others
0Shares
Tags

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker